غوث عبد القادر جیلانی مجتہد
Spread the love
Click to rate this post!
[Total: 1 Average: 5]

کیا شیخ عبد القادر جیلانی غوث مجتہد مطلق درجہ پر فائز تھے ؟

غوث الشیخ عبدالقادر جیلانی کے بارے اعلی حضرت علیہ الرحمہ نے فتاوی رضویہ میں شیخ عبدالقادر جیلانی کے بارے فرماتے ہوئے یہ بات لکھ دی کہ ” شریعت الکبری پر وہ اجتہاد مطلق پر فائز ہو گئے تھے۔”
[فتاوی رضویہ]


غوث پاک کے مجتہد مطلق کے بارے صحیح موقف و تحقیق:

جبکہ میرے علم میں نہیں کہ کہیں بھی شیخ عبد القادر جیلانی نے اپنے بارے میں یہ دعویٰ اجتہاد مطلق کا کیا ہو؟
یا انکے دور کے علماء کی تعداد نے یہ بات کہی ہو کہ شیخ عبدالقادر جیلانی مطلق مجتہد کے درجہ پر فائز ہوں۔
اعلی حضرت نے تصلب محبت اور قادریت کے سبب یہ بات لکھ دی جبکہ دلائل کے اعتبار سے معاملہ اسکے برعکس  ہیں۔
بلکہ اعلی حضرت کے خلاف  محدث الوقت امام فیض احمد اویسی علیہ الرحمہ نے شیخ عبدالقادر کو حنبلیت میں ”مجتہد فی مذہب” کا درجہ لکھا ہے۔
[کیا غوث وہابی تھے؟ ص۷]
یہ بات دلائل کے قریب بھی ہے۔

سب ائمہ نے متفقہ طور پر شیخ عبدالقادر جیلانی علیہ الرحمہ کو حنبلی ائمہ میں شمار کیا ہے۔


غوث عبد القادر جیلانی مجتہد فی مذہب تھے

اور کسی قادری کا یہ دعویٰ ہو کسی کرامت پر مبنی کہانی شریف پر کہ کہیں کہ غوث پاک  نے مرتبہ اجتہاد کا دعوی کیا بھی ہو تو اسکا راستہ بھی بند کردیتے ہیں۔
امام ابن رجب الحنبلی جو  دو  واسطوں سے غوث پاک عبدالقادر کے شاگرد بنتے ہیں اور انہوں نے اپنے دور میں مجتہد مطلق کا دعویٰ کرنے والوں کے خلاف کتاب لکھی اور ثابت کیا کہ ائمہ مجتہدین چار ہی ہیں جنکا مذہب مدون ہو چکا اب کسی پانچوے کی ضرورت نہیں۔
جیسا کہ آپ لکھتے ہیں:
لیکن اسکےب باوجود ایسے افراد اب تک ظاہر ہوتے اور سامنے آتے رہتے ہیں، جو اجتہاد کے درجہ تک پہنچنے کا دعویٰ کرتے ہیں، اور ان ائمہ اربعہ کی تقلید کیے بغیر علم میں باتیں کرتے ہیں ، اور باقی سارے لوگ جو اس درجہ تک نہیں پہنچے انہیں ان چاروں کی تقلید کیے بغیر کوئی چارہ نہٰں ۔ بلکہ جہاں ساری امت داخل ہوئی ہے انہیں بھی داخل ہونا ہوگا۔
[المذھب الاربعہ، ص ۶۸]
امام ابن رجب کی اس بات سے ثابت ہوا کہ متاخرین میں مجتہد مطلق درجہ کا دعویٰ کرنے والے کو ائمہ نے قبول کیا ہی نہیں سرے سے اور نہ ہی غوث عبدالقادر جیلانی کے بارے امام ابن رجب کے دور میں یہ بات معروف تھی کہ غوث پاک صاحب مجتہد مطلق درجہ پر ہوں ۔
بلکہ یہی امام ابن رجب علیہ الرحمہ شیخ عبدالقادر جیلانی کا تعارف اس طرح کرواتے ہیں:
شيخ العصر، وقدوة العارفين، وسلطان المشايخ، وسيد أهل الطريقة في وقته، محيي الدين أبو محمد،
شیخ العصر عارفین اور مشائخ کے سلطان اور اہل طریقہ کے سردار اپنے وقت کے محیی الدین
[ذیل طبقات الحنابلہ ج۲، ص ۱۸۹]


انکا تذکرہ فقط تصوف کے حوالے ہی سے معروفا بیان کیا ہے۔ باقی اہلسنت کے علماء میں انکا شمار تو یقینی بات ہے۔
لیکن انکو مجتہد مانا بھی جائے تو زیادہ سے زیادہ مجتہد فی مذہب کے درجہ کا مجتہد مانا جا سکتا ہے جیسا کہ امام فیض احمد اویسی علیہ الرحمہ نے فرمایا ۔
تحقیق: اسد الطحاوی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے